ShareThis

Monday, April 6, 2009

کچے گھڑے پر تیرنے والو

کچے گھڑے پر تیرنے والو
کیسے پار لگاو گے
درد سمندر دونوں گہرے
آخر ڈوب ہی جاو گے

کالی بدلی جب برسے گی
پانی روک نہ پاو گے
پیار کی خوشبو جب مہکے گی
کیسے ایسے چھپاو گے

پیار کی دنیا سب سے نرالی
کس کس کو سمجھاو گے
قسمیں وعدے سب ہی جھوٹے
پر تم سمجھ نہ پاو گے

2 comments:

  1. واقعی ہم کچے گھڑے پر تیرنے والے ہیں
    مگر آپ کسے کہہ رہے ہیں
    یہ توبتائیں؟

    ReplyDelete
  2. کچے گھڑے تیرنے والے اب اس دنیا میں کہآں

    ReplyDelete