ShareThis

Tuesday, October 13, 2009

متوازی عدالتی نظام

فیصل آباد میں گزشتہ روز  مسلم لیگ (ن) نے چوک گھنٹہ گھرمیں نام نہادعوامی عدالت لگائی۔ اس نام نہادعوامی عدالت نے سابق صدر پرویز مشرف کو آئین شکنی کے جرم میں سزائے موت کاحکم سنایا جس پر فوری طور پر عملدرآمد کرتے ہوئے چوک میں ہی سابق صدرکے پتلے کو پھانسی پر لٹکا دیا گا اور عبرت کا نشانہ بنانے کے لئے بعدازاں ”لاش“ (پتلے) کو چوک میں ہمیشہ کے لئے ایک کھمبے پر لٹکا دیا گیا۔ اس عوامی عدالت کے انعقاد کا اہتمام مسلم لیگ (ن) زیر اہتمام کیا گیا تھا۔ راس نام نہادعوامی عدالت کے سربراہ کا کردار مسلم لیگ ن کے شاہد محمود بیگ ایڈووکیٹ نے انجام دیئے جبکہ استغاثہ مسلم لیگ ن کے ضلعی صدر چوہدری صفدرالرحمن رکن سابق قومی اسمبلی نے ادا کئے۔ جلاد کا کردار مسلم لیگ کے رکن صوبائی اسمبلی خواجہ محمد اسلام نے ادا کیا۔ راس نام نہادعوامی عدالت میں ڈیڑھ سو کے قریب مسلم لیگی کارکن موجود تھے جب لاش کو ٹرک سے اتار کر کھمبے کے ساتھ لٹکایا گیا تو اس وقت بھی کوئی "نعرہ بازی" نہیں ہوئی، بعدازاں تمام لوگ "خاموشی" سے وہاں سے چلے گئے۔

6 comments:

  1. عدالتوں کا جو حال ہے اب ایسی عدالتیں ہی لگیں گئیں

    ReplyDelete
  2. عدالتوں کا جو حال ہے اب ایسی عدالتیں ہی لگیں گئیں

    ReplyDelete
  3. آپ اس عمل کی تعریف نہیں کرتے کہ کوئی ہُلڑ بازی نہ ہوئی ۔ یہی کچھ اگر پی پی پی یا ایم کیو ایم کے حضرات کرتے تو بہت رونق لگتی

    ReplyDelete
  4. آپ اس عمل کی تعریف نہیں کرتے کہ کوئی ہُلڑ بازی نہ ہوئی ۔ یہی کچھ اگر پی پی پی یا ایم کیو ایم کے حضرات کرتے تو بہت رونق لگتی

    ReplyDelete